صحیح بخاریکتاب الغسل

صحیح بخاری جلد اول :كتاب الغسل (غسل کا بیان) : حدیث 286

كتاب الغسل
کتاب: غسل کے احکام و مسائل
(THE BOOK OF GHUSL (WASHING OF THE WHOLE BODY

 

25- بَابُ كَيْنُونَةِ الْجُنُبِ فِي الْبَيْتِ إِذَا تَوَضَّأَ قَبْلَ أَنْ يَغْتَسِلَ:
باب: غسل سے پہلے جنبی کا گھر میں ٹھہرنا جب کہ وضو کر لے (جائز ہے)۔

[quote arrow=”yes”]

1: حدیث اعراب کے ساتھ:

2: حدیث عربی رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

3: حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

4: حدیث کا اردو ترجمہ:

5: حدیث کی اردو تشریح:

English Translation :6 

[/quote]

حدیث اعراب کے ساتھ:  

حدیث نمبر286:

حَدَّثَنَا أَبُو نُعَيْمٍ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا هِشَامٌ، ‏‏‏‏‏‏وَشَيْبَانُ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ يَحْيَى، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي سَلَمَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ سَأَلْتُ عَائِشَةَ، ‏‏‏‏‏‏أَكَانَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَرْقُدُ وَهُوَ جُنُبٌ؟ قَالَتْ:‏‏‏‏ "نَعَمْ، ‏‏‏‏‏‏وَيَتَوَضَّأُ”.

الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:         

286 ـ حدثنا أبو نعيم، قال حدثنا هشام، وشيبان، عن يحيى، عن أبي سلمة، قال سألت عائشة أكان النبي صلى الله عليه وسلم يرقد وهو جنب قالت نعم ويتوضأ‏.‏

حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:  

286 ـ حدثنا ابو نعیم، قال حدثنا ہشام، وشیبان، عن یحیى، عن ابی سلمۃ، قال سالت عایشۃ اکان النبی صلى اللہ علیہ وسلم یرقد وہو جنب قالت نعم ویتوضا‏.‏

ا اردو ترجمہ:  

ہم سے ابونعیم نے بیان کیا، کہا ہم سے ہشام اور شیبان نے، وہ یحییٰ سے، وہ ابوسلمہ سے کہا میں نے عائشہ رضی اللہ عنہا سے پوچھا کہ کیا نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلمجنابت کی حالت میں گھر میں سوتے تھے؟ کہا ہاں لیکن وضو کر لیتے تھے۔

حدیث کی اردو تشریح:   

تشریح : ایک حدیث میں ہے کہ جس گھرمیں کتا یا تصویر یاجنبی ہو تو وہاں فرشتے نہیں آتے۔ امام بخاری رحمۃ اللہ علیہ نے یہ باب لاکر بتلایا ہے وہاں جنبی سے وہ مراد ہے جو وضو بھی نہ کرے اور جنابت کی حالت میں بے پر وابن کریوں ہی گھرمیں پڑا رہے۔

English Translation: 

Narrated Abu Salama: I asked `Aisha "Did the Prophet use to sleep while he was Junub?” She replied, "Yes, but he used to perform ablution (before going to bed).

Related Articles

Back to top button
Close