صحیح بخاریکتاب الحیض

صحیح بخاری جلد اول :كتاب الحيض (حيض کا بیان) : حدیث 310

كتاب الحيض
کتاب: حیض کے احکام و مسائل
(THE BOOK OF MENSES (MENSTRUAL PERIODS
10- بَابُ الاِعْتِكَافِ لِلْمُسْتَحَاضَةِ:
باب: عورت کے لیے استحاضہ کی حالت میں اعتکاف۔

[quote arrow=”yes”]

1: حدیث اعراب کے ساتھ:[sta_anchor id=”top”]

2: حدیث عربی رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

3: حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

4: حدیث کا اردو ترجمہ:

5: حدیث کی اردو تشریح:

English Translation :6 

[/quote]

حدیث اعراب کے ساتھ:  [sta_anchor id=”artash”]

حدیث نمبر310:

حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا يَزِيدُ بْنُ زُرَيْعٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ خَالِدٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عِكْرِمَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عَائِشَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَتِ:‏‏‏‏ "اعْتَكَفَتْ مَعَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ امْرَأَةٌ مِنْ أَزْوَاجِهِ، ‏‏‏‏‏‏فَكَانَتْ تَرَى الدَّمَ وَالصُّفْرَةَ وَالطَّسْتُ تَحْتَهَا وَهِيَ تُصَلِّي”.

الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:        [sta_anchor id=”arnotash”] 

310 ـ حدثنا قتيبة، قال حدثنا يزيد بن زريع، عن خالد، عن عكرمة، عن عائشة، قالت اعتكفت مع رسول الله صلى الله عليه وسلم امرأة من أزواجه، فكانت ترى الدم والصفرة، والطست تحتها وهى تصلي‏.‏

حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:   [sta_anchor id=”urnotash”]

310 ـ حدثنا قتیبۃ، قال حدثنا یزید بن زریع، عن خالد، عن عکرمۃ، عن عایشۃ، قالت اعتکفت مع رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم امراۃ من ازواجہ، فکانت ترى الدم والصفرۃ، والطست تحتہا وہى تصلی‏.‏

ا اردو ترجمہ:   [sta_anchor id=”urdtrjuma”]

ہم سے قتیبہ بن سعید نے بیان کیا، کہا ہم سے یزید بن زریع نے خالد سے، وہ عکرمہ سے، وہ عائشہ رضی اللہ عنہا سے، آپ نے فرمایا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلمکے ساتھ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی ازواج میں سے ایک نے اعتکاف کیا۔ وہ خون اور زردی (نکلتے) دیکھتیں، طشت ان کے نیچے ہوتا اور نماز ادا کرتی تھیں۔

حدیث کی اردو تشریح:   [sta_anchor id=”urdtashree”]

یہ خون استحاضہ کی بیماری کا تھا جس میں عورتوں کے لیے نماز معاف نہیں ہے۔

English Translation:[sta_anchor id=”engtrans”] 

Narrated `Aisha: "One of the wives of Allah’s Apostle joined him in I`tikaf and she noticed blood and yellowish discharge (from her private parts) and put a dish under her when she prayed.”

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

*

code

Back to top button
Close