صحیح بخاریکتاب العیدین

صحیح بخاری جلد دؤم :کتاب استسقاء (پانی مانگنے کا بیان) : حدیث:-1015

كتاب الاستسقاء
کتاب: استسقاء یعنی پانی مانگنے کا بیان

( The Book of)(Invoking Allah for Rain (Istisqaa)

8- بَابُ الاِسْتِسْقَاءِ عَلَى الْمِنْبَرِ:
باب: منبر پر پانی کے لیے دعا کرنا۔

[quote arrow=”yes” “]

1: حدیث اعراب کے ساتھ:[sta_anchor id=”top”]

2: حدیث عربی رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

3: حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

4: حدیث کا اردو ترجمہ:

5: حدیث کی اردو تشریح:

English Translation :6 

[/quote]

حدیث اعراب کے ساتھ:  [sta_anchor id=”artash”]

حدیث نمبر:1015          

حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ ، قَالَ : حَدَّثَنَا أَبُو عَوَانَةَ ، عَنْ قَتَادَةَ ، عَنْ أَنَسٍ ، قَالَ : بَيْنَمَا رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَخْطُبُ يَوْمَ الْجُمُعَةِ إِذْ جَاءَ رَجُلٌ فَقَالَ : يَا رَسُولَ اللَّهِ قَحَطَ الْمَطَرُ فَادْعُ اللَّهَ أَنْ يَسْقِيَنَا ، فَدَعَا فَمُطِرْنَا فَمَا كِدْنَا أَنْ نَصِلَ إِلَى مَنَازِلِنَا فَمَا زِلْنَا نُمْطَرُ إِلَى الْجُمُعَةِ الْمُقْبِلَةِ ، قَالَ : فَقَامَ ذَلِكَ الرَّجُلُ أَوْ غَيْرُهُ فَقَالَ : يَا رَسُولَ اللَّهِ ادْعُ اللَّهَ أَنْ يَصْرِفَهُ عَنَّا ، فَقَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ : ” اللَّهُمَّ حَوَالَيْنَا وَلَا عَلَيْنَا ، قَالَ : فَلَقَدْ رَأَيْتُ السَّحَابَ يَتَقَطَّعُ يَمِينًا وَشِمَالًا يُمْطَرُونَ وَلَا يُمْطَرُ أَهْلُ الْمَدِينَةِ ” .

.حدیث عربی بغیراعراب کے ساتھ:  
[sta_anchor id=”arnotash”]

1015 ـ حدثنا مسدد، قال حدثنا أبو عوانة، عن قتادة، عن أنس، قال بينما رسول الله صلى الله عليه وسلم يخطب يوم الجمعة إذ جاء رجل فقال يا رسول الله، قحط المطر فادع الله أن يسقينا‏.‏ فدعا فمطرنا، فما كدنا أن نصل إلى منازلنا فما زلنا نمطر إلى الجمعة المقبلة‏.‏ قال فقام ذلك الرجل أو غيره فقال يا رسول الله ادع الله أن يصرفه عنا‏.‏ فقال رسول الله صلى الله عليه وسلم ‏”‏ اللهم حوالينا ولا علينا ‏”‏‏.‏ قال فلقد رأيت السحاب يتقطع يمينا وشمالا يمطرون ولا يمطر أهل المدينة‏.‏

حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:   [sta_anchor id=”urnotash”]

1015 ـ حدثنا مسدد، قال حدثنا ابو عوانۃ، عن قتادۃ، عن انس، قال بینما رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم یخطب یوم الجمعۃ اذ جاء رجل فقال یا رسول اللہ، قحط المطر فادع اللہ ان یسقینا‏.‏ فدعا فمطرنا، فما کدنا ان نصل الى منازلنا فما زلنا نمطر الى الجمعۃ المقبلۃ‏.‏ قال فقام ذلک الرجل او غیرہ فقال یا رسول اللہ ادع اللہ ان یصرفہ عنا‏.‏ فقال رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم ‏”‏ اللہم حوالینا ولا علینا ‏”‏‏.‏ قال فلقد رایت السحاب یتقطع یمینا وشمالا یمطرون ولا یمطر اہل المدینۃ‏.‏

‏‏‏اردو ترجمہ:   [sta_anchor id=”urdtrjuma”]

´ہم سے مسدد بن مسرہد نے بیان کیا، انہوں نے کہا کہ ہم سے ابوعوانہ نے بیان کیا، ان سے قتادہ نے بیان کیا، ان سے انس بن مالک رضی اللہ عنہ نے کہ` رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم جمعہ کے دن خطبہ دے رہے تھے کہ ایک شخص آیا اور عرض کیا کہ یا رسول اللہ! پانی کا قحط پڑ گیا ہے، اللہ سے دعا کیجئے کہ ہمیں سیراب کر دے۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے دعا کی اور بارش اس طرح شروع ہوئی کہ گھروں تک پہنچنا مشکل ہو گیا، دوسرے جمعہ تک برابر بارش ہوتی رہی۔ انس رضی اللہ عنہ نے کہا کہ پھر (دوسرے جمعہ میں) وہی شخص یا کوئی اور کھڑا ہوا اور عرض کیا کہ یا رسول اللہ! دعا کیجئے کہ اللہ تعالیٰ بارش کا رخ کسی اور طرف موڑ دے۔ رسول اللہصلی اللہ علیہ وسلم نے دعا فرمائی کہ «اللهم حوالينا ولا علينا» اے اللہ ہمارے اردگرد بارش برسا ہم پر نہ برسا۔ انس رضی اللہ عنہ نے کہا کہ میں نے دیکھا کہ بادل ٹکڑے ٹکڑے ہو کر دائیں بائیں طرف چلے گئے پھر وہاں بارش شروع ہو گئی اور مدینہ میں اس کا سلسلہ بند ہوا۔


حدیث کی اردو تشریح:   [sta_anchor id=”urdtashree”]

اس حدیث میں بظاہر منبر کا ذکر نہیں ہے آپ کے خطبہ جمعہ کا ذکر ہے جو آپ منبر ہی پر دیا کرتے تھے کہ اس سے منبر ثابت ہو گیا۔

English Translation:[sta_anchor id=”engtrans”] 

Narrated Qatada:

Anas I said, “While Allah’s Apostle (p.b.u.h) was delivering the Friday Khutba (sermon) a man came and said, ‘O Allah’s Apostle! Rain is scarce; please ask Allah to bless us with rain.’ So he invoked Allah for it, and it rained so much that we could hardly reach our homes and it continued raining till the next Friday.” Anas further said, “Then the same or some other person stood up and said, ‘O Allah’s Apostle! Invoke Allah to withhold the rain.’ On that, Allah’s Apostle I said, ‘O Allah! Round about us and not on us.’ ” Anas added, “I saw the clouds dispersing right and left and it continued to rain but not over Medina.”

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

*

code

Back to top button
Close