صحیح بخاریکتاب الکسوف

صحیح بخاری جلد دؤم :كتاب الكسوف (سورج گہن کے متعلق بیان) : حدیث:-1058

كتاب الكسوف
کتاب: سورج گہن کے متعلق بیان

Chapter No: 13

باب لاَ تَنْكَسِفُ الشَّمْسُ لِمَوْتِ أَحَدٍ وَلاَ لِحَيَاتِهِ

The solar eclipse does not occur because of someone’s death or life.

باب : سورج گہن کسی کے موت و زیست سے نہیں ہوتا،

[quote arrow=”yes” “]

1: حدیث اعراب کے ساتھ:[sta_anchor id=”top”]

2: حدیث عربی رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

3: حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:

4: حدیث کا اردو ترجمہ:

5: حدیث کی اردو تشریح:

English Translation :6 

[/quote]

حدیث اعراب کے ساتھ:  [sta_anchor id=”artash”]

حدیث نمبر:1058          

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، قَالَ حَدَّثَنَا هِشَامٌ، أَخْبَرَنَا مَعْمَرٌ، عَنِ الزُّهْرِيِّ، وَهِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ، عَنْ عُرْوَةَ، عَنْ عَائِشَةَ ـ رضى الله عنها ـ قَالَتْ كَسَفَتِ الشَّمْسُ عَلَى عَهْدِ رَسُولِ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم فَقَامَ النَّبِيُّ صلى الله عليه وسلم فَصَلَّى بِالنَّاسِ، فَأَطَالَ الْقِرَاءَةَ، ثُمَّ رَكَعَ فَأَطَالَ الرُّكُوعَ، ثُمَّ رَفَعَ رَأْسَهُ فَأَطَالَ الْقِرَاءَةَ، وَهْىَ دُونَ قِرَاءَتِهِ الأُولَى، ثُمَّ رَكَعَ فَأَطَالَ الرُّكُوعَ دُونَ رُكُوعِهِ الأَوَّلِ، ثُمَّ رَفَعَ رَأْسَهُ فَسَجَدَ سَجْدَتَيْنِ، ثُمَّ قَامَ فَصَنَعَ فِي الرَّكْعَةِ الثَّانِيَةِ مِثْلَ ذَلِكَ، ثُمَّ قَامَ فَقَالَ ‏”‏ إِنَّ الشَّمْسَ وَالْقَمَرَ لاَ يَخْسِفَانِ لِمَوْتِ أَحَدٍ وَلاَ لِحَيَاتِهِ، وَلَكِنَّهُمَا آيَتَانِ مِنْ آيَاتِ اللَّهِ يُرِيهِمَا عِبَادَهُ، فَإِذَا رَأَيْتُمْ ذَلِكَ فَافْزَعُوا إِلَى الصَّلاَةِ.‏‏‏‏‏‏‏‏‏‏‏

.حدیث عربی بغیراعراب کے ساتھ:  
[sta_anchor id=”arnotash”]

1058 ـ حدثنا عبد الله بن محمد، قال حدثنا هشام، أخبرنا معمر، عن الزهري، وهشام بن عروة، عن عروة، عن عائشة ـ رضى الله عنها ـ قالت كسفت الشمس على عهد رسول الله صلى الله عليه وسلم فقام النبي صلى الله عليه وسلم فصلى بالناس، فأطال القراءة، ثم ركع فأطال الركوع، ثم رفع رأسه فأطال القراءة، وهى دون قراءته الأولى، ثم ركع فأطال الركوع دون ركوعه الأول، ثم رفع رأسه فسجد سجدتين، ثم قام فصنع في الركعة الثانية مثل ذلك، ثم قام فقال ‏”‏ إن الشمس والقمر لا يخسفان لموت أحد ولا لحياته، ولكنهما آيتان من آيات الله يريهما عباده، فإذا رأيتم ذلك فافزعوا إلى الصلاة ‏”‏‏.‏

حدیث اردو رسم الخط میں بغیراعراب کے ساتھ:   [sta_anchor id=”urnotash”]

1058 ـ حدثنا عبد اللہ بن محمد، قال حدثنا ہشام، اخبرنا معمر، عن الزہری، وہشام بن عروۃ، عن عروۃ، عن عائشۃ ـ رضى اللہ عنہا ـ قالت کسفت الشمس على عہد رسول اللہ صلى اللہ علیہ وسلم فقام النبی صلى اللہ علیہ وسلم فصلى بالناس، فاطال القراءۃ، ثم رکع فاطال الرکوع، ثم رفع راسہ فاطال القراءۃ، وہى دون قراءتہ الاولى، ثم رکع فاطال الرکوع دون رکوعہ الاول، ثم رفع راسہ فسجد سجدتین، ثم قام فصنع فی الرکعۃ الثانیۃ مثل ذلک، ثم قام فقال ‏”‏ ان الشمس والقمر لا یخسفان لموت احد ولا لحیاتہ، ولکنہما آیتان من آیات اللہ یریہما عبادہ، فاذا رایتم ذلک فافزعوا الى الصلاۃ ‏”‏‏.‏

‏‏‏اردو ترجمہ:   [sta_anchor id=”urdtrjuma”]

حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ انہوں نے کہا: رسول اللہﷺکے زمانے میں سورج گرہن ہوا تو آپﷺ کھڑے ہوئے اور لوگوں کو نماز پڑھائی۔ بہت لمبی قراءت کی، پھر بہت لمبا رکوع کیا۔پھر رکوع سے سر اٹھایا۔ پھر لمبی قراءت کی، مگر پہلی قراءت سے کم پھر رکوع کیا اور لمبا رکوع کیا، مگر پہلے رکوع سے کم۔ پھر رکوع سے سر اٹھایا اور دو سجدے کیے۔ پھر کھڑے ہوئے اور دوسری رکعت میں بھی ایسا ہی کیا۔پھر کھڑے ہوئے (نماز سے فارغ ہوکر) اور فرمایا: سورج اور چاند کسی کی موت وحیات سے بے نور نہیں ہوتے۔ وہ دو نشانیاں ہیں اللہ کی نشانیوں میں سے اللہ اپنے بندوں کو دکھلاتا ہے، جب تم یہ گرہن دیکھو تو نماز کی طرف لپکو۔


حدیث کی اردو تشریح:   [sta_anchor id=”urdtashree”]

حدیث اور باب میں مطابقت ظاہر ہے۔

English Translation:[sta_anchor id=”engtrans”] 

Narrated By ‘Aisha : In the lifetime of the Prophet the sun eclipsed and the Prophet (p.b.u.h) stood up to offer the prayer with the people and recited a long recitation, then he performed a prolonged bowing, and then lifted his head and recited a prolonged recitation which was shorter than the first. Then he performed a prolonged bowing which was shorter than the first and then lifted his head and performed two prostrations. He then stood up for the second Raka and offered it like the first. Then he stood up and said, “The sun and the moon do not eclipse because of someone’s life or death but they are two signs amongst the signs of Allah which He shows to His worshipers. So whenever you see them, make haste for the prayer.”

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

*

code

Back to top button
Close