Deprecated: version_compare(): Passing null to parameter #2 ($version2) of type string is deprecated in /home/u482667647/domains/ihyas.com/public_html/DifaeHadith/wp-content/plugins/elementor/core/experiments/manager.php on line 170
صحیح بخاری - حدیث نمبر 278 - Difae Hadith - دفاع حدیث

صحیح بخاری – حدیث نمبر 278

صحیح بخاری – حدیث نمبر 278

باب: اس شخص کے بارے میں جس نے تنہائی میں ننگے ہو کر غسل کیا اور جس نے کپڑا باندھ کر غسل کیا اور کپڑا باندھ کر غسل کرنا افضل ہے۔

حدیث نمبر: 278
حَدَّثَنَا إِسْحَاقُ بْنُ نَصْرٍ ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا عَبْدُ الرَّزَّاقِ ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مَعْمَرٍ ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ هَمَّامِ بْنِ مُنَبِّهٍ ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ، ‏‏‏‏‏‏عَنِ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ كَانَتْ بَنُو إِسْرَائِيلَ يَغْتَسِلُونَ عُرَاةً يَنْظُرُ بَعْضُهُمْ إِلَى بَعْضٍ، ‏‏‏‏‏‏وَكَانَ مُوسَى يَغْتَسِلُ وَحْدَهُ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالُوا:‏‏‏‏ وَاللَّهِ مَا يَمْنَعُ مُوسَى أَنْ يَغْتَسِلَ مَعَنَا إِلَّا أَنَّهُ آدَرُ، ‏‏‏‏‏‏فَذَهَبَ مَرَّةً يَغْتَسِلُ فَوَضَعَ ثَوْبَهُ عَلَى حَجَرٍ فَفَرَّ الْحَجَرُ بِثَوْبِهِ، ‏‏‏‏‏‏فَخَرَجَ مُوسَى فِي إِثْرِهِ، ‏‏‏‏‏‏يَقُولُ:‏‏‏‏ ثَوْبِي يَا حَجَرُ، ‏‏‏‏‏‏حَتَّى نَظَرَتْ بَنُو إِسْرَائِيلَ إِلَى مُوسَى، ‏‏‏‏‏‏فَقَالُوا:‏‏‏‏ وَاللَّهِ مَا بِمُوسَى مِنْ بَأْسٍ وَأَخَذَ ثَوْبَهُ فَطَفِقَ بِالْحَجَرِ ضَرْبًا، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ أَبُو هُرَيْرَةَ:‏‏‏‏ وَاللَّهِ إِنَّهُ لَنَدَبٌ بِالْحَجَرِ سِتَّةٌ أَوْ سَبْعَةٌ ضَرْبًا بِالْحَجَرِ.

حدیث کی عربی عبارت (بغیر اعراب)

حدیث نمبر: 278
حدثنا إسحاق بن نصر ، ‏‏‏‏‏‏قال:‏‏‏‏ حدثنا عبد الرزاق ، ‏‏‏‏‏‏عن معمر ، ‏‏‏‏‏‏عن همام بن منبه ، ‏‏‏‏‏‏عن أبي هريرة ، ‏‏‏‏‏‏عن النبي صلى الله عليه وسلم، ‏‏‏‏‏‏قال:‏‏‏‏ كانت بنو إسرائيل يغتسلون عراة ينظر بعضهم إلى بعض، ‏‏‏‏‏‏وكان موسى يغتسل وحده، ‏‏‏‏‏‏فقالوا:‏‏‏‏ والله ما يمنع موسى أن يغتسل معنا إلا أنه آدر، ‏‏‏‏‏‏فذهب مرة يغتسل فوضع ثوبه على حجر ففر الحجر بثوبه، ‏‏‏‏‏‏فخرج موسى في إثره، ‏‏‏‏‏‏يقول:‏‏‏‏ ثوبي يا حجر، ‏‏‏‏‏‏حتى نظرت بنو إسرائيل إلى موسى، ‏‏‏‏‏‏فقالوا:‏‏‏‏ والله ما بموسى من بأس وأخذ ثوبه فطفق بالحجر ضربا، ‏‏‏‏‏‏فقال أبو هريرة:‏‏‏‏ والله إنه لندب بالحجر ستة أو سبعة ضربا بالحجر.

حدیث کی عربی عبارت (مکمل اردو حروف تہجی میں)

حدیث نمبر: 278
حدثنا اسحاق بن نصر ، ‏‏‏‏‏‏قال:‏‏‏‏ حدثنا عبد الرزاق ، ‏‏‏‏‏‏عن معمر ، ‏‏‏‏‏‏عن ہمام بن منبہ ، ‏‏‏‏‏‏عن ابی ہریرۃ ، ‏‏‏‏‏‏عن النبی صلى اللہ علیہ وسلم، ‏‏‏‏‏‏قال:‏‏‏‏ کانت بنو اسرائیل یغتسلون عراۃ ینظر بعضہم الى بعض، ‏‏‏‏‏‏وکان موسى یغتسل وحدہ، ‏‏‏‏‏‏فقالوا:‏‏‏‏ واللہ ما یمنع موسى ان یغتسل معنا الا انہ آدر، ‏‏‏‏‏‏فذہب مرۃ یغتسل فوضع ثوبہ على حجر ففر الحجر بثوبہ، ‏‏‏‏‏‏فخرج موسى فی اثرہ، ‏‏‏‏‏‏یقول:‏‏‏‏ ثوبی یا حجر، ‏‏‏‏‏‏حتى نظرت بنو اسرائیل الى موسى، ‏‏‏‏‏‏فقالوا:‏‏‏‏ واللہ ما بموسى من باس واخذ ثوبہ فطفق بالحجر ضربا، ‏‏‏‏‏‏فقال ابو ہریرۃ:‏‏‏‏ واللہ انہ لندب بالحجر ستۃ او سبعۃ ضربا بالحجر.

حدیث کا اردو ترجمہ

ہم سے اسحاق بن نصر نے بیان کیا، انہوں نے کہا ہم سے عبدالرزاق نے بیان کیا، انہوں نے معمر سے، انہوں نے ہمام بن منبہ سے، انہوں نے ابوہریرہ (رض) سے، انہوں نے نبی کریم ﷺ سے کہ آپ نے فرمایا بنی اسرائیل ننگے ہو کر اس طرح نہاتے تھے کہ ایک شخص دوسرے کو دیکھتا لیکن موسیٰ (علیہ السلام) تنہا پردہ سے غسل فرماتے۔ اس پر انہوں نے کہا کہ بخدا موسیٰ کو ہمارے ساتھ غسل کرنے میں صرف یہ چیز مانع ہے کہ آپ کے خصیے بڑھے ہوئے ہیں۔ ایک مرتبہ موسیٰ (علیہ السلام) غسل کرنے لگے اور آپ نے کپڑوں کو ایک پتھر پر رکھ دیا۔ اتنے میں پتھر کپڑوں کو لے کر بھاگا اور موسیٰ (علیہ السلام) بھی اس کے پیچھے بڑی تیزی سے دوڑے۔ آپ کہتے جاتے تھے۔ اے پتھر ! میرا کپڑا دے۔ اے پتھر ! میرا کپڑا دے۔ اس عرصہ میں بنی اسرائیل نے موسیٰ (علیہ السلام) کو ننگا دیکھ لیا اور کہنے لگے کہ بخدا موسیٰ کو کوئی بیماری نہیں اور موسیٰ (علیہ السلام) نے کپڑا لیا اور پتھر کو مارنے لگے۔ ابوہریرہ (رض) نے کہا کہ بخدا اس پتھر پر چھ یا سات مار کے نشان باقی ہیں۔

حدیث کا انگریزی ترجمہ (English Translation)

Narrated Abu Hurairah (RA): The Prophet ﷺ said, The (people of) Bani Israel used to take bath naked (all together) looking at each other. The Prophet Moses (علیہ السلام) used to take a bath alone. They said, By Allah! Nothing prevents Moses (علیہ السلام) from taking a bath with us except that he has a scrotal hernia. So once Moses (علیہ السلام) went out to take a bath and put his clothes over a stone and then that stone ran away with his clothes. Moses (علیہ السلام) followed that stone saying, "My clothes, O stone! My clothes, O stone! Till the people of Bani Israel saw him and said, By Allah, Moses (علیہ السلام) has got no defect in his body. Moses (علیہ السلام) took his clothes and began to beat the stone.” Abu Hurairah (RA) added, "By Allah! There are still six or seven marks present on the stone from that excessive beating.” Narrated Abu Hurairah (RA): The Prophet ﷺ said, "When the Prophet ﷺ Job (Aiyub) was taking a bath naked, golden locusts began to fall on him. Job started collecting them in his clothes. His Lord addressed him, O Job! Havent I give you enough so that you are not in need of them. Job replied, Yes! By Your Honor (power)! But I cannot dispense with Your Blessings.”

اس پوسٹ کو آگے نشر کریں