صحیح بخاری – حدیث نمبر 422

صحیح بخاری – حدیث نمبر 422

باب: جسے مسجد میں کھانے کے لیے کہا جائے اور وہ اسے قبول کر لے۔

حدیث نمبر: 422
حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ يُوسُفَ ، ‏‏‏‏‏‏أَخْبَرَنَا مَالِك ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ إِسْحَاقَ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ ، ‏‏‏‏‏‏سَمِعَ أَنَسًا ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ وَجَدْتُ النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فِي الْمَسْجِدِ مَعَهُ نَاسٌ، ‏‏‏‏‏‏فَقُمْتُ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ لِي:‏‏‏‏ أَأَرْسَلَكَ أَبُو طَلْحَةَ ؟ قُلْتُ:‏‏‏‏ نَعَمْ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ لِطَعَامٍ ؟ قُلْتُ:‏‏‏‏ نَعَمْ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ لِمَنْ حَوْلَهُ:‏‏‏‏ قُومُوا، ‏‏‏‏‏‏فَانْطَلَقَ، ‏‏‏‏‏‏وَانْطَلَقْتُ بَيْنَ أَيْدِيهِمْ.

حدیث کی عربی عبارت (بغیر اعراب)

حدیث نمبر: 422
حدثنا عبد الله بن يوسف ، ‏‏‏‏‏‏أخبرنا مالك ، ‏‏‏‏‏‏عن إسحاق بن عبد الله ، ‏‏‏‏‏‏سمع أنسا ، ‏‏‏‏‏‏قال:‏‏‏‏ وجدت النبي صلى الله عليه وسلم في المسجد معه ناس، ‏‏‏‏‏‏فقمت، ‏‏‏‏‏‏فقال لي:‏‏‏‏ أأرسلك أبو طلحة ؟ قلت:‏‏‏‏ نعم، ‏‏‏‏‏‏فقال:‏‏‏‏ لطعام ؟ قلت:‏‏‏‏ نعم، ‏‏‏‏‏‏فقال لمن حوله:‏‏‏‏ قوموا، ‏‏‏‏‏‏فانطلق، ‏‏‏‏‏‏وانطلقت بين أيديهم.

حدیث کی عربی عبارت (مکمل اردو حروف تہجی میں)

حدیث نمبر: 422
حدثنا عبد اللہ بن یوسف ، ‏‏‏‏‏‏اخبرنا مالک ، ‏‏‏‏‏‏عن اسحاق بن عبد اللہ ، ‏‏‏‏‏‏سمع انسا ، ‏‏‏‏‏‏قال:‏‏‏‏ وجدت النبی صلى اللہ علیہ وسلم فی المسجد معہ ناس، ‏‏‏‏‏‏فقمت، ‏‏‏‏‏‏فقال لی:‏‏‏‏ اارسلک ابو طلحۃ ؟ قلت:‏‏‏‏ نعم، ‏‏‏‏‏‏فقال:‏‏‏‏ لطعام ؟ قلت:‏‏‏‏ نعم، ‏‏‏‏‏‏فقال لمن حولہ:‏‏‏‏ قوموا، ‏‏‏‏‏‏فانطلق، ‏‏‏‏‏‏وانطلقت بین ایدیہم.

حدیث کا اردو ترجمہ

ہم سے عبداللہ بن یوسف نے بیان کیا، کہا ہم سے مالک نے اسحاق بن عبداللہ سے انہوں نے انس (رض) سے سنا، وہ کہتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ کو مسجد میں پایا، آپ کے پاس اور بھی کئی لوگ تھے۔ میں کھڑا ہوگیا تو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھ سے پوچھا کہ کیا تجھ کو ابوطلحہ نے بھیجا ہے ؟ میں نے کہا جی ہاں آپ نے پوچھا کھانے کے لیے ؟ (بلایا ہے) میں نے عرض کی کہ جی ہاں ! تب آپ نے اپنے قریب موجود لوگوں سے فرمایا کہ چلو، سب حضرات چلنے لگے اور میں ان کے آگے آگے چل رہا تھا۔

حدیث کا انگریزی ترجمہ (English Translation)

Narrated Anas (RA): I found the Prophet ﷺ in the mosque along with some people. He said to me, "Did Abu Talha send you?” I said, "Yes”. He said, "For a meal?” I said, "Yes.” Then he said to his companions, "Get up.” They set out and I was ahead of them.

اس پوسٹ کو آگے نشر کریں